پیرس کی ایک اداس شام

میں چارلس ڈیگال ائیر پورٹ پر اترا تو پیرس شہر بارش میں بھیگ رہا تھا، یہ جوانی کے بوسوں جیسی نرم نرم بارش تھی جس نے شہر کی روشنیوں کو خوشبودار بنا دیا تھا، ہم نے اکثر بارش میں روشنیوں کو پھیلتے دیکھا ہے، آپ کبھی بارش میں باہر نکل کر دیکھیں آپ کو روشنیاں سات رنگوں میں تقسیم ہوتیں اور پھر یہ ساتھ رنگ اپنے وجود سے تھوڑا سا باہر نکلتے دکھائی دیں گے، میں جب بھی بارش میں بھیگی روشنیوں کو پھیلتے دیکھتا ہوں تو مجھے محسوس ہوتا ہے ہے جیسے ان روشنیوں کے وجود میں میرے جذبات شامل ہو گئے ہیں۔
پڑھنا جاری رکھئے۔۔۔