لندن قیادت کے حکم پر عمران فاروق کے والدین، بیوہ اور بچے یرغمال بنا لئے گئے

Dr. Imran Farooq Wife

متحدہ قومی موومنٹ کی لندن قیادت کے حکم پر متحدہ کی رابطہ کمیٹی کے معطل کنونیر ڈاکٹر عمران فاروق کے والدین، بیوہ اور بچوں کو سیکورٹی کے نام پر یرغمال بنا لیا گیا ہے۔ ڈاکٹر عمران فاروق کی رہائش گاہ پر سیکورٹی کے نام پر متحدہ کے 250 کارکنوں کی ڈیوٹیاں لگا دی گئی ہیں۔ ڈاکٹر عمران فاروق کی بیوہ کو سلیم شہزاد کی اجازت کے بغیر کسی سے بھی ملنے کی اجازت نہیں ہو گی۔ متحدہ کے چھ رہنماؤں کی ڈیوٹی لگائی گئی ہے کہ ان میں سے ایک رہنما ہر وقت ڈاکٹر عمران فاروق کے گھر پر موجود رہے گا اور یہ سلسلہ اسوقت تک جاری رہے گا جب تک شمائلہ عمران لندن واپس نہیں چلی جاتیں۔ ذرائع کا دعوی ہے کہ شمائلہ عمران کو ڈاکٹر عمران فاروق کے چہلم تک پاکستان میں رہنے کا کہہ کر ملک میں لایا گیا تھا، تاہم اب ان پر دباؤ ڈالا جا رہا ہے کہ وہ عدت گزار کر ہی لندن واپس جائیں۔
پڑھنا جاری رکھئے۔۔۔