لمحہ فکریہ

السلام علیکم

بلاشبہ موبائل ایس ایم ایس ہماری نوجوان نسل میں بے حد مقبول ہے بلکہ اگر یوں کہا جائے کہ دیوانگی کی حد تک ہماری نوجوان نسل ایس ایم ایس کی عادی ہو چکی ہے تو یہ بے جا نہ ہو گا۔
ویسے تو موبائل ایس ایم ایس ہماری نوجوان نسل میں بہت سی برائیاں لے کر آیا ہے اور ہماری نوجوان نسل کے بگاڑ اور اس کی اخلاقیات کی تباہی میں پیش پیش ہے لیکن اس کے ساتھ ساتھ بہت معمولی حد تک اس کا اچھا استعمال بھی ہو رہا ہے۔

آپ نے بہت سارے ایسے ایس ایم ایس دیکھے ہوں گے جن میں مختلف قسم کی اسلامی معلومات ہوتی ہیں۔ گو کہ اس میں سے اکثریت ایسے پیغامات کی ہوتی ہے جن کی حیثیت کچھ حد تک مشکوک ہوتی ہے ایسے ایس ایم ایس چند ایسی اسلامی معلومات لیئے ہوئے ہوتے ہیں جن کا کوئی سر پیر نہیں ہوتا ایسے پیغامات اکثر گمراہ کرتے ہیں۔

لیکن پچھلے کچھ عرصے سے میں نے یہ بات شدت سے نوٹ کی ہے کہ ہماری نوجوان نسل کا کچھ حصہ ایسے پیغامات کی حوصلہ شکنی کر رہا ہے اور صحیح اسلامی پیغامات کو فروغ دے رہا ہے، ان پیغامات میں قرآنی آیات کے تراجم اور احادیث مبارکہ نمایاں ہوتی ہیں۔
پڑھناجاری رکھئے۔۔۔